دہشت گردی کے واقعات میں ہمیشہ غریب،نہتے اور بے گناہ لوگ متاثرہوئے ہیں ،نعمت ظہیر

0 3

کوئٹہ/لندن(ویب ڈیسک)خدمت خلق فاؤنڈ یشن انٹرنیشنل کے چیئرمین و تمغہ امتیاز نعمت اللہ خان ظہیر نے مچھ میں ہزارہ قوم سے تعلق رکھنے والے 10بے گناہ لا چار،نہتے کانکنوں کی بہیمانہ قتل جیسے دالخراش سانحہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کے واقعات میں ہمیشہ غریب،نہتے اور بے گناہ لوگ متاثرہوئے ہیں

صوبے میں ایک سوچھے سمجھے منصوبے کے تحت پر امن حالات کو خراب کرنے کی دانستہ کوشش کیا جارہاہے شدت پسندی،مذہبی منافرت،فرقہ وار،انتہاء پسندی،دہشتگردی بے گناہ انسانوں کی قتل وغارت گیری انسانی حقوق کی پامالی،سیاسی کارکنوں کی ٹارگٹ کلنگ،اغواء نما گرفتاریوں کے ذریعے قیمتی انسانی جانوں کی ضیاع کرنے کی گناؤنی کھیل کھیلا جارہا ہے تاکہ یہاں کے لوگوں کی حقیقی مسائل اور اہم ایشو سے لوگوں کی توجہ ہٹا یا جاسکے ملک دشمن عناصر قوتیں بلوچستان کی ترقی و خوشحالی کو سبوتاژ کرنے کے لئے بے گناہ اور نہتے مزدوروں کو نشانہ بنارہے ہیں

جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے‘ کچھ شرپسند عناصر اپنے آقاؤں کو خوش کرنے کے لئے اس طرح واقعات کرتے ہیں انہو ں نے متاثرہ افراد کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ بلوچستان کے ہر گھر میں لوگ شہید ہوئے ہیں او رملک دشمن عناصر قوتیں یہاں کے عوام کو خوشحال دیکھنا نہیں چاہتے اور صوبے میں بدامنی پید اکرکے ترقی کی راہ میں رکاوٹیں پید اکرنے کی کوشش کررہے ہیں مگر دہشت گرد اور ملک دشمن عناصر قوتیں کبھی بھی اپنے مذموم عزائم میں کامیاب نہیں ہوں گے اور سیکورٹی فورسز کے نوجوان دہشت گردوں کے خلاف بھرپور کارروائی کرینگے‘ بلوچستان کے پرامن حالات کو خراب کرنے کے لئے کچھ شرپسند عناصر ایسے بے گناہ اور نہتے لوگوں کو نشانہ بنا کر اپنے مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں

جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے صوبے کے عوام محب وطن اور امن کے خواہاں ہیں مزدوروں کی ٹارگٹ کلنگ صوبے کے روایات کے منافی ہے اور صوبے میں صوبائی حکومت بھی عوام کو تحفظ دینے میں ناکام ہو چکی ہے اس طرح واقعات صوبے کے روایات کے منافی ہے اور کئی سالوں بعد صوبے میں امن کی صورتحال بہتر ہوئی اور ملک کے دوسروں صوبوں سے لوگوں نے سیر وتفریح اور سیاحت کے لئے بلوچستان کا رخ کیا مگر کچھ دشمن عناصر نے پرامن حالات خراب کرنے کیلئے مزدوروں کو ٹارگٹ کرکے دنیا کو پیغام دیا کہ بلوچستان میں دہشتگرد ی کے سواء کچھ نہیں کیا جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے بلوچستان حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے اگر حکومت ہوتی تو اس طرح واقعات رونما نہیں ہوتے انہو ں نے مطالبہ کیا کہ واقعہ میں ملوث عناصر کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.