جماعت اسلامی کا وزیر اعلیٰ ہاؤس کے سامنے دھرنے کا اعلان

0 165

پولیس میں سیاسی بنیادوں پر بھرتیاں ختم کی جائیں، یہ آئی جی کا کام ہے کہ بھرتیاں میرٹ پر کی جائیں اور پولیس کے نظام کو بہتر کریں، دنیا بھر میں یہ قاعدہ ہے کہ مقامی لوگ پولیس میں ہوں، کراچی کے نوجوانوں کو نوکریاں نہیں ملتیں۔ کراچی میں پولیس اسٹریٹ کرائم کو روکنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے، اسٹریٹ کرائم اور منشیات دو اہم مسئلے ہیں، جب کوئی جوان شہید ہوتا ہے تو ہمیں تکلیف ہوتی ہے۔پارٹی رہنماو¿ں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے امیر جماعت

اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمان کا کہنا تھا سیاسی جماعتیں کہہ رہیں کہ ووٹر لسٹیں درست نہیں ہیں، ہم نے بھی اس بارے میں بات کی، آخری مردم شماری کی ذمہ داری ن لیگ کی تھی جو غلط ہوئی، سندھ حکومت نے صرف اختلافی نوٹ لکھا اس کے علاوہ کچھ نہیں کیا۔حافظ نعیم الرحمان کا کہنا تھا آج دن 4 بجے ہم وزیراعلیٰ ہاو¿س پر پرامن احتجاجی دھرنا دیں گے، ہمارا مطالبہ ہے

کہ کراچی میں فوری بلدیاتی انتخابات کرائے جائیں۔امیر جماعت اسلامی کراچی کا یہ بھی کہنا تھا منشیات کے اڈے پولیس کے تعاون کے بغیر نہیں چل سکتے، اسٹریٹ کرائم نہیں رکتے تو پھر ہم یہ سوال کرتے ہیں کہ رینجرز اور پولیس کیا کر رہی ہے؟ اسٹریٹ کرائم روکنے کے لیے رینجرز کو مکمل اختیارات دیے جائیں۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.