بھارت کے تنگ نظر اور فاشسٹ حکمرانوں نے گذشتہ کئی مہینوں سے کشمیر کی حسین وادی کو جیل  خانے میں تبدیل کررکھا ہے: وزیراعلی بلوچستان 

پاکستان اور بلوچستان کے عوام ہر حال میں اپنے کشمیری بھائیوں کی حمایت جاری رکھیں گے

0 13

بھارت کے تنگ نظر اور فاشسٹ حکمرانوں نے گذشتہ کئی مہینوں سے کشمیر کی حسین وادی کو جیل  خانے میں تبدیل کررکھا ہے: وزیراعلی بلوچستان 

کوئٹہ (آن لائن )بلوچستان عوامی پارٹی کے صدر وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ کشمیری عوام بھارتی ظلم و بربریت کا شکار ہیں بھارت کے تنگ نظر اور فاشسٹ حکمرانوں نے گذشتہ کئی مہینوں سے کشمیر کی حسین وادی کو جیل خانے میں تبدیل کررکھا ہے۔ مقبوضہ جموں وکشمیر میں بھارت کے مظالم اور انسانی حقوق کی صریحا خلاف ورزیوں پر بڑی طاقتوں کی خاموشی اور بے حسی تاریخ کا المیہ ہے عالمی برادری کو معاشی مفادات کیلئے اخلاقیات کو نظر انداز نہیں کرنا چاہئے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے 5فروری کو یوم یک جہتی کشمیر کے حوالے سے صوبائی اسمبلی میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزرا میر عارف جان محمد حسنی، میر سلیم احمد کھوسو، مٹھا خان کاکڑ، پارلیمانی سیکرٹریز محترمہ بشری رند، دھنیش کمار، وزیراعلی کے کوآرڈنیٹر برائے پبلک افئیرزبلال خان کاکڑ، کمشنر کوئٹہ ڈویژن سمیت کشمیری عوام اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد تقریب میں موجود تھی۔
وزیراعلی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیاکہ پاکستان اور بلوچستان کے عوام ہر حال میں اپنے کشمیری بھائیوں کی حمایت جاری رکھیں گے۔ انہوں نے مغرب کی قوتوں پر حیرت اور افسوس کا اظہار کیا کہ ہٹلر کی فسطائیت پر بجا طور پر آواز اٹھانے اور اس کے خلاف جنگ لڑنے والوں نے آج ہمارے پڑوس میں مودی حکومت کی فسطائیت اور اقلیتوں اور خاص طور سے مسلمانوں کے خلاف
ہونے والے مظالم پر مجرمانہ خاموشی اختیار کررکھی ہے۔

انسانی المیہ جنم لے رہا اس کے خلاف آواز اٹھانے کی دنیا بھرکے انصاف پسنداور باضمیر لوگوں کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا میں ظلم و جبر کرنے والوں کی تاریخ سیاہ ہے مودی کا اصل چہرہ واضح ہوچکا ہے۔ وزیراعلی بلوچستان نے کہا کہ بھارتی حکومت اور اس کی سیکورٹی فورسز نے کشمیر میں ظلم و ستم کا جو بازار گرم کررکھا ہے اور اس کے نتیجے میں وہاں جو انسانی المیہ جنم لے رہا اس کے خلاف آواز اٹھانے کی دنیا بھرکے انصاف پسنداور باضمیر لوگوں کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ 5فروری کو یوم یکجہتی کشمیر منانے کا ایک مقصد دنیا کو حقائق سے آگاہ کرنا اور مظلوم کشمیری عوام کی حمایت کیلئے ان کے ضمیر کو جگانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کشمیری عوام کو پیغام دینا چاہتے ہیں
کہ ہم آپ کے ساتھ کھڑے ہیں اور ہمیشہ آپ کے ساتھ رہیں گے اور بہت جلد ہمارے کشمیری بھائی بھارت کے ظلم سے آزاد اور کھلی فضا میں سانس لیں گے۔ وزیراعلی نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ بلوچستان کے تمام اضلاع میں یوم یک جہتی کشمیر کے حوالے سے ریلیاں نکالی اور تقریبات کا اہتمام کیاگیا جو اس بات کا ثبوت ہے کہ بلوچستان کے محب وطن عوام مظلوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم خطے میں سلامتی اور امن چاہتے ہیں
لیکن یہ بات واضح کرنا چاہتے کہ امن و استحکام کیلئے ظلم و جبر اور ناانصافی کا خاتمہ ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کے دن سے متعلق ہمیں سیاسی حوالے سے بھی کسی نہ کسی فورم پر اپنا پیغام ضرور شئیر کرنا چاہئے۔ ہمیں اس کازکو آگے بڑھانا ہے، کشمیری عوام کے ساتھ یکجہتی ہمیشہ ہے اور رہے گی۔ صوبائی وزیر میر سلیم احمدکھوسہ، پارلیمانی سیکرٹریز، محترمہ بشری رند، دھنیش کمار، اور وزیراعلی کے کوآرڈنیٹر بلال خان کاکڑ نے بھی تقریب سے خطاب کیا۔ بعدازاں وزیراعلی بلوچستان نے صوبائی وزرا کے ہمراہ ہاتھوں کی زنجیر بناکر کشمیری عوام سے یکجہتی کا اظہار بھی کیا۔
You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.