رسول اللہ ﷺ اوراصحاب محمدؐکی گستاخی ناقابل معافی جرم ہے ،مولانامحمودالحسن قاسمی

0 196

جمعیت علماء اسلام نظریاتی پاکستان کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری مولنا محمودالحسن قاسمی تراویح میں ختم قرآن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ رسول اللہ ﷺ اوراصحاب محمدؐکی گستاخی ناقابل معافی جرم ہے ناموس رسالت اور ناموس صحابہ دو ارب مسلمانوں کا مشن ہے اور حرمت رسول کے دفاع کے لئے مسلمانوں کی نظروں میں حرمت رسول کی حفاظت سے بڑھ کر اور کسی چیز اہمیت نہیں ہونی چاہئے ناموس رسالت کے دفاع کے لیےایک نہیں ہزاروں ،لاکھوں،کروڑوں اربوں مسلمان غازی علم دین شہید عامر چیمہ ،ممتازقادری ،خالد، بن کر میدان میں نکل جائینگے انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کی توہین رسالت پر سزائے موت کے خلاف قرار دادوں ہم قدم کی نوک پر رکھتے ہیں ناموس رسالت کی قانون سزائے موت پر امت مسلمہ کھبی سمجھوتہ نہیں کرینگے انہوں نے کہا کہ مسلسل گستاخیوں سے ملک میں آگ بھڑکانے کی منظم سازش کا حصہ ہے اگر رسول اللہ ﷺ اور صحابہ رضوان علیہم اجمعین کی شان میں گستاخی نہ روک دیں تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ رسول اللہ ﷺ اور صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین، امہات المومنین، اہل بیت عظام ؓاور خلفائے راشدینؓ کے خلاف ہرزہ سرائی کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین، امہات المومنین، اہل بیت عظام ؓاور خلفائے راشدینؓ کا احترام تمام مکاتب فکر کے علماء کے نزدیک مسلّم ہے ﷲتعالیٰ نے صحابہ کو ایمان کا معیارقرار دیاگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نبی اکرم ﷺ کی حرمت کے تحفظ کیلئے ہر قسم کے سیاسی اختلافات سے بالاتر ہوکر میدان میں نکل جائے تحفظ ناموس رسالت ﷺ کیلئے تو قدم قدم پر جان کی بازی کی فدا کاری کو شعار بنایا جائے  ۔ انہوں نے کہا کہ مولانا محمد علی جوہر کی ایمانی غیرت و حمیت کے الفاظ ہر مسلمان کے جذبات کی ترجمانی کرتے ہیں ناموس رسالت کی تحفظ کے لیے نہ قانون کی ضرورت ہے، نہ عدالتوں کی حاجت۔ تاریخ گواہ ہے کہ گستاخ رسول ﷺکو مسلمان نے معاف نہیں کیا گستاخ رسولﷺکے لیے اسلام نے چودہ سو سال پہلے قتل کاسزا مقرر کیا انہوں نے کہا کہ پیغمبر اسلام ﷺاور اسلام کے خلاف پروپیگنڈہ کفری قوتوں کی متعصبانہ خمیر میں شامل ہے اور اس کے لئے انہوں نے بڑے بڑے ادارے قائم کئے شعائراسلام کے قلعے اورمقدس شخصیات پر مختلف محاذوں سے حملہ آور ہیں، وہ چاہتے ہیں کہ اس قلعے میں شگاف پڑے، انہیں معلوم ہے کہ دین اسلام ہی ان کی کھوکھلی اور فرسودہ تہذیب کو کارزار حیات میں شکست و ریخت سے دو چار کرکے مٹاسکتا ہے کہ وہی ایک زندہ جاوید اور قیامت تک رہنے والا دین برحق ہے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.