تین سال سے جاری اتحاد کو ٹوٹنا نہیں چاہئے، اتحادی وزراء

0 123

کوئٹہ:وزیراعلیٰ بلوچستان کے حامی اور اتحادی وزراء نے کہاہے کہ وزیراعلیٰ بلوچستان کا خیر سگالی پیغام ناراض اراکین کوپہنچایا،چاہتے ہیں کہ معاملات مل بیٹھ کر ہی حل ہوجائیں تین سال سے جاری اتحاد کو ٹوٹنا نہیں چاہئے،مائنس جام کمال فارمولہ زیرغور نہیں یہ کوئی طریقہ نہیں کہ وزارتوں سے استعفیٰ دیں،42ارکان کی ایک بیٹھک ہونی چاہیے جہاں ہر رکن اپنی خدشات،تحفظات سب کے سامنے رکھیں۔ان خیالات کااظہار وزیراعلیٰ بلوچستان کے حامی واتحادی وزراء ومشیر نوابزادہ گہرام بگٹی،عبدالخالق ہزارہ،حاجی میٹھا خان کاکڑنے بلوچستان اسمبلی میں میڈیا نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے ناراض اراکین سے مذاکرات کئے ناراض صوبائی وزرا میں میر اسد اللہ بلوچ اور پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی نصیب اللہ مری، موجود تھے تاہم مذاکرات کے دوران کچھ ناراض اراکین ملاقات کئے بغیر چلے گئے، انہوں نے کہاکہ ہم وزیراعلی جام کمال خان خیرسگالی کا پیغام لیکر آئے تھے،ناراض دوستوں سے طویل ملاقات کی چاہتے ہیں کہ معاملات مل بیٹھ کر ہی حل ہوجائیں امید ہیں کہ ناراض اراکین ہماری بات مان لیں گے،وزراء نے کہاکہ 42اراکین کااتحاد ہے جس میں صرف 14ارکان ناراض ہیں ہونا تو یہ چاہیے کہ ہم سب مل بیٹھ کر ایک دوسرے کے ساتھ خدشات اور تحفظات کااظہار کرے۔انہوں نے کہاکہ تین سال سے جاری اتحاد کو ٹوٹنا نہیں چاہئے،مائنس جام کمال فارمولہ زیرغور نہیں یہ کوئی طریقہ نہیں کہ وزارتوں سے استعفیٰ دیں۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.