سپریم کورٹ نے ساڑھے چار کروڑ چیک فراڈ کیس کے ملزم اورنگزیب کی درخواست ضمانت بعد از گرفتاری خارج کردی

0 11

سپریم کورٹ نے ساڑھے چار کروڑ چیک فراڈ کیس کے ملزم اورنگزیب کی درخواست ضمانت بعد از گرفتاری خارج کردی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)سپریم کورٹ نے ساڑھے چار کروڑ چیک فراڈ کیس کے ملزم اورنگزیب کی درخواست ضمانت بعد از گرفتاری خارج کردی۔ پیر کو جسٹس منظور احمد ملک کی سربراہی میں قائم تین رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔وکیل ملزم ہارون

الرشید نے کہاکہ ملزم چھ ماہ سے جیل میں ہے۔جسٹس منظور ملک نے کہاکہ چھ ماہ کیسے ہو گئے؟ ملزم کب سے جیل میں ہے؟ ۔ ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد نیاز اللہ نیازی نے کہاکہ ملزم 18 نومبر سے جیل میں ہے۔جسٹس منظور ملک نے کہاکہ یہ تو ساڑھے تین ماہ بنتے ہیں،

آپ جج سے غلط بیانی کر رہے ہیں۔عدالت نے غلط بیانی پر ملزم کے وکیل کو جھاڑ پلا دی۔ جسٹس منظور احمد ملک نے کہاکہ وکیل اپنے مؤکل کی حمایت کرے لیکن جج کے ساتھ دھوکہ نہ کرے، ملزم پر کتنے روپے کے دھوکہ کا الزام ہے؟ ۔ وکیل ملزم نے کہاکہ ساڑھے چار کروڑ روپے

الزام ہے۔ ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد نے کہا کہ ملزم کی ایک اور کیس میں ضمانت خارج ہو چکی ہے۔ جسٹس منظور ملک نے کہاکہ وہ کیس کتنے روپے کا ہے؟ ۔ وکیل ملزم نے کہاکہ دوسرا کیس تقریباً ایک کروڑ کا ہے۔ جسٹس منظور ملک نے کہا کہ جب ایک کروڑ کے کیس میں ضمانت نہیں ہوئی تو چار کروڑ میں کیسے دیں؟ ،کیس ٹرائل کورٹ میں ہے اس کا فیصلہ ہو جائے تو فریش گراؤنڈز پر دوبارہ آ جائیں۔عدالت نے ملزم اورنگزیب کی ضمانت بعد از گرفتاری کی درخواست خارج کردی

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.