ذمہ دار حکام تعلیمی اداروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں، محمد نور مسکان زئی

1 184

ذمہ دار حکام تعلیمی اداروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں، محمد نور مسکان زئی

خاران (ویب ڈیسک )چیف جسٹس فیڈرل شریعت کورٹ آف پاکستان جناب محمد نور مسکان زئی نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں معیاری تعلیم ہی سے ہمارے زیر تعلیم طلباء ایک تعلیم یافتہ قوم بن کر ملک وقوم کو روشن مستقبل فراہم کرسکیں گے ذمہ دار حکام تعلیمی

اداروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں ان خیالات کا اظہار انھوں نے گورنمنٹ انٹر کالج مسکان قلات سر خاران کے دورے کے موقع پر کیااس موقع پر چیف جسٹس جناب محمد نور مسکان زئی نے کالج کے مختلف شعبوں کا معائنہ کیا کالج پرنسپل پروفیسر محمد الیاس بلوچ نے کالج میں تعلیمی سرگرمیوں اور مسائل سے متعلق بریفننگ دیا اور کالج پرنسپل پروفیسر محمد الیاس بلوچ نے چیف جسٹس فیڈرل شریعت کورٹ کو اپنا لکھا ہوا ایک کتاب پیش کیا ،

چیف جسٹس فیڈرل شریعت کورٹ جناب محمد نور مسکان زئی نے انٹر کالج مسکان قلات میں بہتر تعلیمی ماحول پیدا کرنے پر کالج پرنسپل پروفیسر محمد الیاس بلوچ اور اس کے اسٹاف کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کالج طلباء اور والدین کمیٹی ممبران سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ تعلیمی اداروں میں طلباء وطالبات کو معیاری تعلیم کی فراہمی اور تعلیمی اداروں میں بہتر تعلیمی ماحول اور سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح رہنا چاہیے کیونکہ ایک تعلیم یافتہ قوم ہی

اپنے ملک وقوم کو روشن مستقبل فراہم کرسکے گا اور یہ زیر تعلیم طلباء ہمارے روشن مستقبل ہیں چیف جسٹس فیڈرل شریعت کورٹ جناب محمد نور مسکان زئی نے گورنمنٹ انٹر کالج مسکان قلات میں اساتذہ کی کمی دور کرنے سمیت کالج میں امتحانی ہال کلاس رومز اساتذہ کے لئے رہائشی کالونی لائیبریری کے لئے فرنیچر بجلی ودیگر مسائل کو حل کرنے کے حوالے سے ذمہ حکام سے بات کرنے کی یقین دھانی کرائی

You might also like
1 Comment
  1. […] مشکل کردار میری پہلی ترجیح ہے،گلوکارہ مسکان […]

Leave A Reply

Your email address will not be published.