کوئٹہ حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ

0 20

کوئٹہ حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ چیئر مین سینٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمہوری سوچ اور صحت مندانہ جمہوری رویوں کا مظہر نہیں بلوچستان عوامی پارٹی اتحادیوں کیساتھ مل کر تحریک عدم اعتماد کو ناکام بنا ئیگی ترجمان حکومت بلوچستان نے چیئر مین سینٹ محمد صادق سنجرانی کے خلاف اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے سینٹ سیکرٹریٹ میں جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس تحریک کی محرک و شریک جماعتوں کے اس روئیے سے جمہوری عمل کو کوئی فائدہ تو نہیں ہوگا بلکہ چھوٹی اکائیوں کے احساس محرومی میں اضافہ ضرور ہوگا اپنے ایک بیان میں ترجمان صوبائی حکومت نے کہا کہ 72 سالوں میں پہلی بار ایوان بالا کی سربراہی کا اعزاز بلوچستان کو حاصل ہوا جو مساویانہ اور صحت مندانہ جمہوری عمل کے فروغ کا ایک روشن پہلو ہے تاہم ایک ہی سال بعد چیئرمین سینٹ کو ہٹانے کے لئے سازشیں کی جارہی ہیں اور تحریک عدم اعتماد انہی سازشوں کا حصہ ہے باعث افسوس پہلو یہ ہے کہ تحریک عدم اعتماد کی اس کوششوں میں قومی سطح کی بعض وہ جماعتیں بھی پیش پیش ہیں جو اپنے منشور میں بلوچستان کو سیاسی عمل و فیصلہ سازی میں شریک کرنے کی دعوے دار ہیں اور ملکی سطح کے سیاسی منظر نامے میں بلوچستان کے نام پر بھی سیاست کرتی آئی ہیں تاہم اب جبکہ ملک میں سیاسی ہلچل مطلوب ہے ایسے میں بلوچستان کو ہی سیاسی قربانی کی بھینٹ چڑھانے کی تیاریاں ہورہی ہیں جو ایک افسوسناک امر ہے ایوان بالا کی پارلیمانی تاریخ میں موجودہ چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی نے جس غیر جانبداری سے ایوان کی کارروائی چلائی اس کا موازنہ ماضی کے کسی بھی چیئر مین سے کیا جائے تو بلا شبہ حقیقی معنوں میں پائیدار جمہوری عمل کا یہ کریڈٹ موجودہ چیئر مین میر صادق سنجرانی کو ہی جاتا ہے یہ ان کی غیر جانبداری کا واضح ثبوت ہے کہ کسی ایک بھی رکن ایوان بالا کو ان سے کوئی شکایت نہیں بلکہ ان کی سربراہی میں پارلیمانی بزنس بہتر طور پر عوامی امنگوں کا عکاس رہا ترجمان صوبائی حکومت لیاقت علی شاہوانی نے کہا کہ ماضی میں بلوچستان کے ساتھ ہونے والی زیادتیاں کسی سے پوشیدہ نہیں بدقسمتی سے فیڈریشن میں بلوچستان کی موثر اور فیصلہ ساز پوزیشن کے لئے دیرپا سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا گیا اب ایک ایسے وقت میں جبکہ محض ایک سال قبل ہی ایوان بالا کی سربراہی بلوچستان کو سونپی گئی تحریک عدم اعتماد کی صورت میں ہونے والا ایسا کوئی بھی عمل بلوچستان کے ساتھ ہونے والی انہی زیادتیوں کا تسلسل تصور کیا جائے گا اور سیاسی نظام حکومت کے لئے اچھی مثال ثابت نہیں ہوگا۔ ترجمان صوبائی حکومت نے کہا کہ ماضی کی تمام تر سیاسی محرومیوں اور تمام تر حالات و واقعات کو خاطر میں نہ لاتے ہوئے بھی چئیرمین سینٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد لائی جاتی ہے تو اس کا بھرپور مقابلہ کریں گے اور بلوچستان حکومت چئیرمین سینٹ کے دفاع میں صف اول میں ہوگی اور ہم اپنے تمام اتحادیوں سے مل کر ایسی سازشوں کو ناکام بنا دیں گے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.