بلوچی زبان کے عظیم شاعر ملا فاضل رند

0 235

بلوچی زبان کے عظیم شاعر ملا فاضل رند کی یاد میں ایک روزہ “ادبی مشاعرہ” بلوچستان کے تاریخی مقام مند مکران میں قبائلی شخصیت میر فدا حکیم رند کی سرپرستی میں 19 مارچ بروز جمعہ کو منعقد کیا جارہا ہے جس میں بلوچستان بھر سے بلوچی زبان کے ادیبوں فنکاروں گلوکار مصنفوں ماہرین آثار و مختلف طبقاتِ فکر کے لوگ بڑی تعداد میں شرکت کرینگے آپ تمام احباب سے بھی التماس کیجاتی ہے اس ایک روزہ ادبی مشاعرے میں شرکت کرکے بلوچی زبان کے عظیم شاعر ملا فاضل رند کی زندگی کے فن سے مستفید ہو اس ایک روزہ مشاعرے کے پروگرام میں بلوچی زبان کے عظیم کلاسیکل شاعر ملا فاضل رند کے زندگی پر روشنی ڈالی جائے گی بلوچی زبان کے عظیم کلاسیکل شاعر ملا فاضل رند کے زندگی پر مختصراً تعارف تاریخ کے اوراق سے بلوچی زبان کے معروف نامور شاعر و ادیب ملافاضل جو کہ 1200ہجری میں قاسم چات مند میں پیدا ہوئےاگر دیکھا جائے تو ملافاضل کی شاعری میں ہمیں صوفیانہ انداز نظر آتا ہے بلوچی زبان کے علاوہ فارسی میں بھی انہیں عبور حاصل تھا یہ کہنا بےجا نہ ہوگا کہ م ±لا فاضل کو بلوچی شاعری میں صف اوّل کا درجہ حاصل ہے پوری بلوچ قوم کو م ±لا فاضل رند کے بارے میں آگاہی ہونی چاہئے پر یہاں پر یہ امر ہے کہ مند جو کہ م ±لا فاضل کا آبائی گاو ¿ں ہے بلوچستان بلخصوص مند مکران کی نئی نسل ملا فاضل کے بارے میں خاص آگاہی نہیں رکھتی الیمہ یہ ہے ریسرچ کی کمی اس کمی کو مکمل جامہ پہنانے کے لیے بلوچی لائبریری بنایا جائے “ تاکہ نءنسل کو م ±لا فاضل رند و دیگر ادیب و مفکر و اہم شخصیات کے بارے میں آگاہی حاصل ہو اگر م ±لا فاضل کی آخری آرام گاہ کو دیکھا جائے تو مند سورو میں ایک عظیم شاعر و ادیب و مفکر کی آرام گاہ کی حالت بوسیدہ تھی مگر مکران ڈویڑن کے سماجی و قبائلی شخصیت میر فدا حکیم رند صاحب نے خستہ حالی کو دور کرنے کے لیے اپنی مدد آپ کے تحت تعمیراتی کے کام کا آغاز کردیا اب بہتر مقبرے کی شکل میں بنایق جارہا ہے دیگر قوموں کی عظیم شخصیات بلوچی زبان کا مشہور شاعر ملا فاضل رند بھی مذکور کہاوت کو اپنے ایک جوابی عنصر میں دھراتا ھے ملا فاضل رند نے 1270 ھ میں مند مکران میں داعی اجل کو لبیک کہا ملا فاضل اپنے جوابی شعر جسے بلوچی میں پسو کہتے ہیں وہ اپنے ایک حریف شاعر ملا بہادر مراستانی ساکن کولواہ مکران کو مخاطب کرتے ہیں۔۔* کلہور و جام زی گور و گبول و جامڑی و رخشانی و پر گوزی درست انت انس میر چاکری * کلہور قبیلہ۔جام زءقبیلہ۔مری قبیلہ گورقبیلہ۔ گبول قبیلہ۔ جامڑی قبیلہ۔ رخشانی قبیلہ۔ اور نمد پوش قبیلہ۔سب کے سب میر چاکر کی اقوام ہیں

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.