اسلام آباد ہائی کورٹ کا ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو کا فرانزک تجزیہ کرانے کی پیشکش

0 8

اسلام آباد ہائی کورٹ نے ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو کا فرانزک تجزیہ کرانے کی پیشکش

اسلام آباد(ویب ڈیسک)اسلام آباد ہائی کورٹ میں سابق چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار کے آڈیو کلپ کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیشن قائم کرنے کے لئے سندھ ہائی کورٹ بار کے سابق صدر صلاح الدین احمد کی درخواست پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ اصل آڈیو کلپ کا معلوم نہیں کہ وہ کہاں موجود ہے۔ درخواست نے جواب دیا کہ

 

اس متعلق ہمیں بھی علم نہیں، ہماری استدعا ہے کہ معاملے کی انکوائری کے لیے ایک خود مختار کمیشن بنایا جائے، اورسابق چیف جسٹس کی مبینہ آڈیو کی انکوائری کرائی جائے کہ وہ درست ہے یا غلط۔

درخواست گزار صلاح الدین ایڈووکیٹ نے کہا کہ ان کی پٹیشن میں بنیادی استدعا ثاقب نثار کے آڈیو کلپ کی انکوائری سے متعلق ہے، اس میں یہ نہیں کہا گیا کہ دوسری طرف وہ کسی جج سے بات کررہے ہیں، دیگر حوالہ جات سمجھانے کے لیے شامل کیے، ابھی یہ مرحلہ نہیں کہ ہم کسی کو قصور وار یا بے قصور قرار دیں، یہ بات قبل از وقت ہوگی، یہ چیزیں انکوائری کے دوران دیکھی جائیں گی۔ صحافی احمد نورانی نے فیکٹ فوکس پر ثاقب نثار کی آڈیو کلپ کے حوالے

 

سے سٹوری کی، آڈیو کلپ کی فرانزک رپورٹ کے مطابق اسے ایڈٹ نہیں کیا گیا، انہوں نے فرانزک رپورٹ پڑھ کر سنائی اور عدالتی استفسار پر بتایا کہ یہ رپورٹ انٹرنیٹ سے حاصل کی، ن کا کہنا تھا کہ اس آڈیو کلپ کی کاپی تمام چینلز کے پاس ہے جنہوں نے یہ آڈیو چلانے کا رسک لیا، چینلز نے اس کو سنجیدہ لے کر توہین عدالت کی کارروائی کے خدشے کے باوجود یہ آڈیو کلپ چلائے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.