فاریسٹری تھرو ڈرپ ایریگیشن کے کانسپٹ پر بھی کام کیا جائیگا،وزیراعلیٰ بلوچستان

0 11

کوئٹہ (ویب ڈیسک )وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی زیر صدارت آئندہ مالی سال 22-2021 کے لیے محکمہ ماحولیات، فشریز اور جنگلات کی مجوزہ ترقیاتی اسکیمات اور انکے کانسیپٹ پیپرز کی تیاری سے متعلق اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں صوبائی وزیر لائیو اسٹاک و ماحولیات مٹھا خان کاکڑ، چیف سیکرٹری بلوچستان، ایڈیشنل چیف سیکریٹری منصوبہ بندی و

ترقیات، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری، سیکرٹری فنانس، سیکرٹری ماحولیات، سیکرٹری جنگلات و جنگلی حیات، سیکرٹری اطلاعات، ڈی جی بی سی ڈی اے اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کو محکمہ ماحولیات، فشریز اور جنگلات کی نئے مالی سال 22-2021 کےلئے مجوزہ ترقیاتی اسکیمات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔سیکرٹری ماحولیات نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نئے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں حب میں انوئرنمٹل لیب کے قیام کے لئے

مجوزہ منصوبے کے کانسپٹ پیپر کی منظوری دی گئی ہے۔ جبکہ اسٹڈی ان سولڈ ویسٹ مینجمنٹ اور گوادر میں ای پی اے کے آفس کی تعمیر کے منصوبے تجویز کیے گئے ہیں۔ محکمہ فشریز کے حکام کی جانب سے بریفنگ میں بتایا گیا کہ آئندہ مالی سال کےلئے کانسپٹ کلیئرنس کمیٹی نے محکمہ فشریز کے سات کانسپٹ پیپرز کلیئر کیے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ کیج فارمنگ، موبائل کوالٹی کنٹرول لیبارٹری، ماڈل فش فارم کے قیام، ری سرکولیٹنگ ہیچری سسٹم،

کنزیومر فش پروسیسنگ کی سہولت کے منصوبے تجویز کیے گئے ہیں۔سیکرٹری جنگلات نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نئے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے لیے محکمہ جنگلات کی 4 مجوزہ اسکیمات کے کانسپٹ پیپرز کلیئر کیے گئے ہیں۔ جن میں سلیمان رینج میں فوڈ سیکیورٹی کے لیے رینج لینڈز کی بہتری، مینگروز ریسرچ سینٹر کے قیام اور وادی شعبان میں ایکو ٹورزم کی ترقی کے منصوبے تجویز کیے گئے ہیں۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.