ایک آنکھ والے بچے کی پیدائش، تصویر وائرل

0 617

ایک آنکھ والے بچے کی پیدائش، تصویر وائرل

نوجوانوں کیلئے بڑی خوشخبری

عراق میں ایک آنکھ والے انسانی بچے کی پیدائش ہوئی جسے دیکھ کر اسپتال کا عملہ بھی حیران ہوگیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق عراق کے علاقے ذی قار کے اسپتال میں ایک آنکھ والے عجیب و غریب بچے کی پیدائش ہوئی، البتہ بچہ پیدائش کے فوراً بعد ہی انتقال کر گیا۔ سوشل میڈیا پر اس بچے کی تصویر کافی وائرل ہورہی ہے جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بچے کے چہرے پر درمیان میں دو کے بجائے صرف ایک آنکھ موجود ہے۔ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ ایک آنکھ والے بچے کی پیدائش غیر معمولی ہے

شاہ رخ خان کی فلم”ڈان“3 بارےبڑی خبرسامنے آگئی

اور اس کی وجہ ماں اور باپ کے خون میں یکسانیت نہ ہونا یا پھر حمل کے دوران ماں کے پیٹ میں کسی جراثیم کا موجود ہونا ہے ۔اس کے علاوہ ایک اور ڈاکٹر نے کہا کہ بچے کے دماغی ٹشوز میں کمی بھی اس غیر معمولی پیدائش کی وجہ ہوسکتی ہے۔رپورٹس کے مطابق 1665 میں ایسا پہلا حیران کن کیس سامنے آیا تھا جس میں ایک آنکھ والا بچہ پیدا ہوا تھا اور دنیا میں اب تک صرف 7 ہی ایسے کیسز سامنے آئے ہیں۔

مزید تفصیلات

ایک آنکھ والے بچے کی پیدائش ہوئی ہے جس کے بعد نومولود کی خبریں اور تصاویر سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر وائرل ہو گئی ہیں، صارفین کی جانب سے اس پر تبصروں کا سلسلہ جاری ہے۔

عراقی میڈیا کے مطابق ذی قار گورنری کے اسپتال میں ایک آنکھ والے بچے کی پیدائش ہوئی جو اسپتال کی تاریخ میں اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے۔

اس ضمن میں السومریہ نیوزنے ذی قار کے محکمہ صحت کے ذرائع سے بتایا ہے کہ ایک آنکھ والا بچہ شمال میں الرفاعی جنرل اسپتال میں پیدا ہوا۔

محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق اس نوعیت کے بچوں کی حالت کافی نازک ہوتی ہے جو زیادہ تر اموات کا بھی سبب بنتی ہے۔

مقامی میڈیا نے الرفاعی جنرل اسپتال کے ایک ڈاکٹر کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ نومولود بچے کی پیدائش کے بعد موت ہو گئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سوشل میڈیا سائٹس پر نومولود بچے کی تصاویر بہت بڑے پیمانے پر شیئر کی جار ہی ہیں جن سے معلوم ہوا کہ پیدا ہونے والے بچے  کی ایک آنکھ چہرے کے درمیان تھی۔

اس حوالے سے اسپتال کے ایک ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ یہ صورتحال ماں اور باپ کے خون میں عدم مطابقت یا حمل کے دوران ماں کے پیٹ میں کسی جرثومے کی موجودگی کا نتیجہ ہوسکتی ہے اور دوسری وجہ یہ بھی ہوتی ہے کہ بچے کے دماغی ٹشوز میں کمی ہو۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.