جعلی پاکستانی پاسپورٹ استعمال کرنے والے غیرملکیوں کے خلاف تحقیقات سست روی کا شکار

0 108

ذرائع کے مطابق غیر ملکیوں کو مبینہ پاکستانی سفری دستاویزات سندھ اور بلوچستان سے جاری کی گئیں۔

اسلام آباد(نمائندہ امبرین بلوچ)گلوبل ٹائمز میڈیا یورپ کے مطابق جعلی پاکستانی پاسپورٹ پر بیرون ملک جانے والے گرفتار غیر ملکیوں کے خلاف متعلقہ پاکستانی اداروں کی تحقیقات سست روی کا شکار ہیں۔مذکورہ پاسپورٹس کی ایف آئی آر سمیت درج دیگر مقدمات میں نادرا ریکارڈ کی فراہمی سست روی کا شکار ہے۔ذرائع کے مطابق ایف آئی اے میں 7 ماہ میں درج متعدد مقدمات کیلئے درکار ریکارڈ نادرا کی جانب سے مبینہ طور پر موصول نہیں ہوا۔ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کی جانب سے نادرا  سےطلب کردہ ریکارڈ مبینہ مشتبہ شناختی کارڈز پر سفر کرنے والے مقامی اور غیرملکیوں کے حوالے سے ہے۔چند ماہ کے دوران کراچی ائیرپورٹ سے مشتبہ پاکستانی سفری دستاویزات پربیرون ملک جانے کی کوشش کرنے پر کئی مسافروں کو گرفتارکیا جا چکا ہے۔مشتبہ پاکستانی شناختی کارڈز اور پاسپورٹس پر سفر کے الزام میں غیرملکیوں کو بھی گرفتار کیا گیا تھا۔ذرائع کے مطابق غیرملکیوں کو مبینہ پاکستانی سفری دستاویزات سندھ اور بلوچستان سے جاری کی گئیں۔ایف آئی اے ذرائع کے مطابق ایک ایف آئی آر میں نامزد 16 پاسپورٹس کی تفصیلات پاسپورٹ ڈائریکٹوریٹ نے ایف آئی اے کو ارسال کی تھیں۔
سدرن ڈائریکٹوریٹ امیگریشن اینڈ پاسپورٹس کے مطابق 16 پاسپورٹس میں سے 12 پاسپورٹس کا ریکارڈ ہی موجود نہیں، ایک پاسپورٹ بنوں جبکہ 3 قمبر شہداد کوٹ کے پاسپورٹ دفاتر سے جاری کئے گئے۔
آن لائن پاسپورٹ ٹریکنگ سسٹم کے مطابق یہ پاسپورٹس جاری ہی نہیں ہوئے۔مراسلہ کے مطابق جن پاسپورٹس کا ریکارڈ نہیں وہ مبینہ طور پر جعلی ہیں اور متعلقہ پاسپورٹ دفاتر سے جاری ہی نہیں ہوئے۔16 پاسپورٹس کے ضمن میں 11 قومی شناختی کارڈز کا ریکارڈ بھی دستیاب نہیں ہے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.