نیب کا کیس ڈھائی سال سے چل رہا ہے جرم کا پتہ نہیں کیا ہے، شاہد خاقان عباسی

0 19

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ نیب کا کیس ڈھائی سال سے چل رہا ہے ،جرم کا پتہ نہیں کیا ہے،اپوزیشن پر جھوٹے کیسز بنائے گئے ،اگر جھوٹ بول کے ملک چلانا ہے تو زیادہ دیر تک نہیں چل سکے گا، جب تک نیب رہے گا اس وقت تک ملک نہیں چلے گا۔ منگل کو احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نیب کا کیس ڈھائی سال سے چل رہا ہے ،جرم کا پتہ نہیں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ لگتا ہے

ہمارا کام کیس کا سامنا کرنا ہے،جج ارشد ملک کا کیس پوری دنیا کے سامنے ہے، جھوٹے کیسز بنائے گئے اور سامنے اپوزیشن پر بنائے گئے۔انہوں نے کہاکہ چینی، گندم اور ایل این جی میں اربوں روپے کھا گئے، کوئی کیس نہیں بنتا، جو کیس بن رہے ہیں اپوزیشن پر بن رہے ہیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ایل این جی ٹرمینل میں جو صارف رقم ادا کرتا ہے وہ کیا ہے، ایک وزیر کا ایل این جی ٹرمینل ڈیزل پر چلا اس سے ملک کو نقصان پہنچا۔انہوں نے کہا کہ جب ٹرمینل ایل این جی پر چل رہا تھا اس کی بچت 16 ارب تھی اور 4 ٹرمینل جو چل رہے ہیں،

ایل این جی پر اس سے 50 ارب کی سالانہ بچت ہو رہی ہے،انہوں نے کہا کہ آج ملک میں گیس نہیں، مہنگائی آسمان کو چھو رہی ہے، اگر جھوٹ بول کے ملک چلانا ہے تو زیادہ دیر تک نہیں چل سکے گا۔انہوں نے کہا کہ جب تک نیب رہے گا اس وقت تک ملک نہیں چلے گا۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم جو مرضی فیصلے کر لے اس پر عمل نہیں ہو گا۔انہوں نے کہا کہ آج نارووال کا کیس چل رہا کل کرتار پور ریفرنس چلے گا۔انہوں نے کہاکہ ندیم بابر صاحب جھوٹ بولتے رہیں، میں ان کا مشکور ہوں انہوں نے اعتراف کیا ایل این جی ضروری ہے،انہوں اعتراف کیا کہ اس گورنمنٹ میں کوئی معاہدہ نہیں ہوا۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.