سنجرانی کے کردار کو بلوچستان میں سخت ناپسندیدگی سے دیکھا جارہا ہے، یارمحمدرند

کابینہ کا رکن ہونے کے باوجود وزیراعظم ملاقات کےلئے 5 منٹ نہیں دئےے جاتے

0 6

سنجرانی کے کردار کو بلوچستان میں سخت ناپسندیدگی سے دیکھا جارہا ہے، یارمحمدرند

کوئٹہ(ڈیلی صحافت وئب ڈیسک )وزیراعظم پاکستان کے معاون خصوصی ،تحریک انصاف بلوچستان کے پارلیمانی لیڈر وصوبائی وزیر تعلیم سرداریارمحمدرند نے کہاہے کہ کابینہ کا رکن ہونے کے باوجود وزیراعظم ملاقات کےلئے 5 منٹ نہیں دئےے جاتے، سینیٹ الیکشن میں بلوچستان کے ساتھ ظلم ہورہا ہے،سینیٹ انتخابات کیلئے تشکیل کردہ پارلیمانی بورڈ میں بلوچستان کی نمائندگی نہ ہونا بہت بڑا ظلم ہے ،صادق سنجرانی کون ہوتے ہیں فیصلے کرنے والے، سنجرانی کے کردار کو بلوچستان میں سخت ناپسندیدگی سے دیکھا جارہا ہے،صوبائی کابینہ کا حصہ ہوں لیکن فیصلوں میں مجھے نظرانداز کیاجاتاہے ،پی ٹی آئی میں شمولیت اختیارکرکے عوامی مسائل کے حل کی توقعات تھیں

وزیراعظم عمران خان نے تشریف لایالیکن ان سے ملاقات نہیں ہوئی

لیکن افسوس وہ پوری نہ ہوسکی۔ان خیالات کااظہار انہوں نے نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔سرداریارمحمدرند نے کہاکہ عمران خان کے تحفظات ضرور مجھ سے ہیں ،وزیراعظم عمران خان نے تشریف لایالیکن ان سے ملاقات نہیں ہوئی بلوچستان کے معاملات پر مجھ سے مشاورت نہیں کی جاتی ،ہم نے بلوچستان کی عوام سے کمیٹمنٹ کرکے آئے ہیں

کہ ان کے حقوق اور مفادات کا تحفظ کرینگے ،جہاں تک جام کمال کا تعلق ہے انہوں نے ہمیں فار گرانٹڈ لیاہے میں کابینہ کا وزیر ہوں بحیثیت پارلیمانی لیڈر صوبائی کابینہ کے فیصلوں میں مجھے اعتماد میں نہیں لیاجاتا اور سب سے بڑی زیادتی یہ ہوئی کہ سینیٹ انتخابات کیلئے بنائی گئی کمیٹی میں بلوچستان کی کوئی نمائندگی ہی نہیں ہے جن شکایات اور تحفظات کے باعث ہم قومی جماعتوں کو چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شامل ہوئے تھے ہمیں یہی توقعات تھیں

کہ یہاں پر ہم بلوچستان کے مفادات کاتحفظ کرسکیںگے لیکن افسوس ہے کہ ایسا نہیں ہوا ہم نے صرف ٹی وی پر یہ دیکھاکہ جی 70کروڑ روپے کا ریٹ چل رہاہے کس نے دیا کس نے لیا کچھ نہیں پتہ اب عبدالقادر جیسے پیراشوٹر کو ٹکٹ ملے یہاں کے لوگوں نے انہیں سرپر اٹھایا میں پی ٹی آئی بلوچستان کا صوبائی صدر رہا لیکن میں انہیں کبھی نہیں دیکھا

کہ وہ کب پارٹی میں آیا ،انہوں نے کہاکہ میں صرف ایک سوال پوچھتاہوں کہ چیئرمین صادق سنجرانی کا پاکستان تحریک انصاف سے کیا تعلق ہے وہ خود کون اور کیا سیاسی بیگراؤنڈ رکھتے ہیں سنجرانی کے کردار کو بلوچستان میں سخت ناپسندیدگی سے دیکھا جارہا ہے۔3مارچ فیصلہ کن تاریخ ہے جس کے بہت سے اثرات نہ صرف بلوچستان بلکہ پاکستان کی سیاست پر پڑیںگے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.