کچھ عناصر جو قبضہ مافیا سے ملکر اور اپنے اپ کو ڈی ایچ اے کا نمائندہ ظاہر کرکے ہماری زمینوں کا سودا کررہے ہیں اس کی اجازت نہیں دیں گے:ملک فیصل یاسین زئی

ہنہ اوڑک وگردونواح میں ہمارے 50ہزار ایکڑ زمین آبادوآجداد کی ملکیت ہے

0 8

(کوئٹہ ڈیلی صحافت ویب ڈیسک   )

پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء یاسین زئی قبیلے کے سربراہ ملک فیصل خان یاسین زئی نے کہا ہے کہ ہنہ اوڑک وگردونواح میں ہمارے 50ہزار ایکڑ زمین آبادوآجداد کی ملکیت ہے بعض لوگ زمین مافیا سے ملکر غلط طریقے سے ہماری زمینوں کے وارث بن کر ڈی ایچ اے کو پیش کررہے ہیں جس کی ہم اجازت نہیں دیں گے اور اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس سلسلے میں کارروائی کرے اور ہمیں اپنے زمینوں کے مالک سمجھ کر جو بھی ہماری زمینوں پر تعمیراتی کام یا کوئی اور اسکیم بناتے ہے وہ ہمیں اعتماد میں لے کر ورنہ اس سے ہمارے یاسین زئی قبیلے میں تشویش پیدا ہو گئ ‘

 

یہ بات انہوں نے ہنہ اوڑک میں یاسین زئی فارم ہاؤس میں دیگر قبائلی معتبرین ملک ولی کاکڑ‘ مولوی رحمت اللہ‘ نورالدین کاکڑ اور دیگر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی‘ انہوں نے کہاکہ میں یاسین زئی قبیلے کا سربراہ کی حیثیت سے ڈی ایچ اے کو ہنہ اوڑک سمیت بلوچستان بھر میں آنے پر خوش آمدید کہتا ہوں اور ان کے ساتھ ہر قسم تعاون کرنے کے لئے بھی تیار ہوں لیکن کچھ عناصر جو قبضہ مافیا سے ملکر اور اپنے اپ کو ڈی ایچ اے کا نمائندہ ظاہر کرکے ہماری زمینوں کا سودا کررہے ہیں اس کی اجازت نہیں دیں گے ہم اپنی زمینوں کے وارث ہے اور رہیں گے کیونکہ یہ زمینیں ہمارے آباو اجداد کی ہے انہوں نے کہاکہ اس سلسلے میں اگر ڈی ایچ اے ہمارے ساتھ بلکہ یہاں زمینوں کے مالکان کے ساتھ رابطے کریں تو ہم ان کو مشروط طور پر زمینیں دینے کیلئے تیار ہیں

لیکن کسی اور کے ذریعے یا ہمیں بائی پاس کرکے زمین حاصل کرنے کی کوشش کی تو ہم اجازت نہیں دیں گے انہوں نے کہاکہ اس وقت دیگر علاقوں کی طرح یہاں پر بھی کچھ زمین مافیا سرگرم ہے اور غلط طریقے سے کسی اور لوگوں کی زمینوں کا سودا کررہے ہیں اس حوالے سے ہم اجازت نہیں دیں گے انہوں نے کہاکہ ہنہ اورک و گردونواح میں ہمارا50ہزار ایکڑ زمین آباؤ اجداد کی ملکیت ہے جن کی سرحدیں دمڑ قوم‘ساتکزئی قوم اورپاک آرمی کے ساتھ ہے جنہوں نے اپنی باؤنڈری بھی لگادی ہے اور ہماری زمینیں آن دہ ریکارڈ ہے اس سلسلے میں ہماری خواہش ہے

کہ ایک بار پھر اس زمین کا سٹلمنٹ نئے سرے سے ہو جائے اور پرانی ریکارڈ کو مدنظر رکھتے ہوئے اس عمل کو مکمل کیا جائے انہوں نے کہاکہ ہم پاکستان کے محب الوطن ہے اور ترقی پر یقین رکھتے ہیں ہماری خواہش ہے کہ ہمارے زمینوں پر بھی ترقیاتی کام اور سرکاری دفاتر قائم ہو جائیں اس سے قبل ہم نے تین سو ایکڑ جیل خانہ جات اسی طرح کیسکو کو بھی دئیے ہیں ڈی ایچ اے آگے آکر ہم سے رابطہ کریں اور ہماری زمینوں کی معاوضہ دیکر ہم ان کو بھی دینے کے لئے تیار ہیں

انہوں نے کہاکہ اسی طرح ہم نے کوئٹہ کینٹ کیلئے زمین وقف کی ہے اور ان کے ساتھ ہر قسم کی تعاون کیلئے تیار ہے انہوں نے کہاکہ اس سلسلے میں اگر ڈی ایچ اے نے یاسین زئی قبیلے کے سربراہ اور دیگر کو اعتماد میں نہیں لیا تو اس سے ہمارے قبیلے میں تشویش پائی جائے گی انہوں نے کہاکہ ہم چیف جسٹس بلوچستان جسٹس جمال خان مندوخیل کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہیں جنہوں نے غلط طریقے سے سٹلمنٹ جو ہوگیا ہے اس کو کینسل کیا امید ہے کہ چیف جسٹس اور دیگر اعلیٰ حکام نئے سٹلمنٹ اور ہماری زمینوں کے حوالے سے مزید بھی تعاون کریں گے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.