چلی کے آسمان پر پراسرار سرخ روشنیاں نمودار

0 215

چلی کے آسمان پر پراسرار سرخ روشنیاں نمودار

چلی:(ویب ڈیسک)چند روز قبل چلی کے مشہور ریگستان اتاکامہ کے آسمانوں پر گہری سرخ رنگ کی روشنیاں دیکھی گئیں جو کبھی گہرے گلابی کہر میں بھی تبدیل ہوتی رہیں۔

ماہرین نے ان پر غور کرکے بتایا ہے کہ یہ ایک قدرتی مگر کمیاب مظہر ہے جسے ’ سرخ فضا‘ یا ریڈ اسپرائٹس کہا جاتا ہے۔ زمین سے 50 سے 90 کلومیٹر کی بلندی پر غیرمعمولی برقی سرگرمی سے یہ مظہر اس وقت بنتا ہے جب نیچے بارشوں والےبادل اور زمین کی سطح قریب ہو۔

تاہم یہ بہت ہی کمیاب واقعہ ہے اور یہی وجہ ہے کہ اس پر مزید تحقیق نہیں کی جاسکی ہے۔ ماہرین کے مطابق دن میں سورج کی روشنی زمینی فضا میں موجود آکسیجن اور نائٹروجن سے الیکٹرون نکال باہر کرتی ہے اور رات کو یہ الیکٹرون اور ان کے سالمات (مالیکیول) دمکنے لگتے ہیں۔

یہاں کے مقامی افراد نے سرخ روشنیوں سے متعلق کئی باتیں گھڑی ہوئی ہیں جنہیں سائنسداں ہمیشہ ہی مسترد کرتےرہے ہیں۔ اس کے علاوہ بعض پائلٹ اور نوبیل انعام یافتہ سائنسداں سی ٹی آر ولسن نے نے بھی اس کا ذکر کیا ہے۔ پھر 1989 میں جامعہ منی سوتا نے ریڈ اسپرائٹس کی کچھ تصاویر لی تھیں اور ان کی بلندی کا ذکر کیا تھا۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.