کوئٹہ صوبائی مشیر تعلیم محمد خان لہڑی نے کہا ہے کہ

0 2

کوئٹہ صوبائی مشیر تعلیم محمد خان لہڑی نے کہا ہے کہ محکمے سے گھوسٹ ملازمین کے خاتمے کیلئے 600سے زائد اساتذہ کو شوکاز نوٹس جاری اور جواب ملنے کے بعد قانون کے مطابق کارروائی کی جائیگی تعلیم کی بہتری کیلئے جلد ایکٹ اسمبلی سے منظور کریگی اساتذہ تعلیم کی بہتری کیلئے کوشش کریں سیاست یا تنظیم سازی سکول کے اوقات میں کسی صورت برداشت نہیں، وزیراعظم پاکستان بلوچستان دورہ کے موقع پر سندھ بلوچستان کے پانی مسئلے کے حل کیلئے اقدامات کریں ،یہ بات انہوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہاکہ سرکاری تعلیمی اداروں کی بہتری کیلئے موجودہ حکومت نے عہد کیا ہے اس حوالے سے نہ کوئی رعایت بھرتی جائیگی اور نہ ہی اساتذہ کو تعلیم کے نام پر سیاست اور نہ سکول اوقات کے دوران تنظیم سازی کی اجازت دینگے بلوچستان سے گھوسٹ ملازمین کے خاتمے کیلئے حکومت نے ایک کمیٹی بنائی جس نے21اساتذہ کو فارغ ،600سے زائد اساتذہ کو شوکاز نوٹس جاری کیے جواب ملنے کی صورت میں ان کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائیگی انہوں نے کہاکہ اساتذہ کو ڈیوٹی پر حاضر اور تعلیمی نظام کو سیاست سے پاک کرنے کیلئے اپوزیشن جماعتوں سے ملکر بلوچستان اسمبلی سے ایکٹ منظور کرائینگے ایکٹ منظور ہونے کی صورت میں تعلیم کی بہتری کیلئے ہمیں آسانی ہوگی انہوں نے کہاکہ موجودہ حکومت نے وزیراعلیٰ بلوچستان کی قیادت میں ضلعی سطح پر میرٹ کے مطابق بے روزگار نوجوانوں کیلئے روزگار کی پالیسی ترتیب دی ہے جلد اس حوالے سے باقاعدہ عملی طور پر آغاز بھی ہوگا کیونکہ اس سے قبل ڈویژن یا صوبہ کی سطح پر جو تعیناتیاں ہوتی تھی تو اکثر اضلاع کے نوجوان اس سے محروم ہوجاتے،اس دفعہ ہر ضلع کے نوجوان اپنے ضلع سے ہی بھرتی ہونگے انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ بلوچستان اور سندھ کے حوالے سے پانی کا مسئلہ عرصے سے چلاآرہا ہے اس سلسلے میں بلوچستان اکثر اوقات پانی سے نظر انداز ہوتا ہے نصیر آباد اور جعفرآباد میں پٹ فیڈر اور دوسرے کینال سے پانی کی مقدار بہت کم مل رہی ہے وزیراعظم پاکستان عمران خان کا دورہ کوئٹہ کے موقع پر ان سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس سلسلے میں اقدامات کریں ، سندھ اور بلوچستان کے درمیان پانی مسئلے کے حل کیلئے وفاقی سطح پر اقدامات کریں۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.