ایل این جی کیس ،شاہد خاقان، مفتاح اور عمران الحق کے جوڈیشل ریمانڈ میں 19 نومبر تک توسیع

0 137

اسلام آباد:  اسلام آباد کی احتساب عدالت نے شاہد خاقان عباسی، مفتاح اسماعیل اور عمران الحق کے جوڈیشل ریمانڈ میں 19 نومبر تک توسیع کر دی، شاہدخاقان عباسی نے ایل این جی کیس کا ٹرائل ٹی وی پر دکھانے کی درخواست جمع کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ یہ ٹرائل عوام کو براہ راست دکھایا جائے تاکہ سب کو پتہ چلے، عمران خان کہتے ہیں میں احتساب کر رہا ہوں جب کہ چیئرمین نیب کہتے ہیں احتساب میں کر رہا ہوں، سب براہ راست دکھایا جائے تاکہ لوگوں کو پتہ چلے ہو کیا رہا ہے۔منگل کو ایل این جی کیس میں شاہد خاقان عباسی کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔کیس کی سماعت کے دوران انہوں نے ایل این جی کیس کا ٹرائل ٹی وی پر دکھانے کی درخواست عدالت میں جمع کراتے ہوئے کہا کہ یہ ٹرائل عوام کو براہ راست دکھایا جائے تاکہ سب کو پتہ چلے، عمران خان کہتے ہیں میں احتساب کر رہا ہوں جب کہ چیئرمین نیب کہتے ہیں احتساب میں کر رہا ہوں، سب براہ راست دکھایا جائے تاکہ لوگوں کو پتہ چلے ہو کیا رہا ہے۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے درخواست کی کہ انہیں کیس کی تیاری کیلئے لیپ ٹاپ کی سہولت دی جائے جس پر نیب پراسیکیوٹر نے کہا قانون کے مطابق قیدی کو لیپ ٹاپ کی سہولت نہیں دی جا سکتی۔سابق وزیراعظم نے شفا اسپتال میں اپنے خرچے پر علاج کرنے کی درخواست بھی احتساب عدالت میں جمع کرائی جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ الشفا اسپتال میں اپنے خرچے پر سرجری کرانا چاہتا ہوں، پنجاب حکومت کسی چیز کی ذمہ داری لینے کو تیار نہیں۔اسلام آباد کی احتساب عدالت نے ایل این جی کیس میں شاہد خاقان عباسی، مفتاح اسماعیل اور عمران الحق کے جوڈیشل ریمانڈ میں 19 نومبر تک توسیع کر دی اور تمام ارکان کو آئندہ سماعت پر پیش کرنے کا حکم دیا۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.