طلباء کو سڑکوں پر گسیٹنا اور گرفتار کرنا تعلیم دشمن عمل ہے،جس کی بھرپور مذمت کرتے ہیں، غضنفر کھیتران

0 5

(صحافت ویب ڈیسک)
بلوچسستان نیشنل پارٹی کے رکن غضنفر محمد کھیتران نے اپنے جاری کردہ مذمتی بیان میں کہا هے طلباء کے جائز مطالبات تسلیم کرنے کے بجائے ان پر لاٹھی چارج کررہے ہیں اور روڈوں پر گرفتار کرکے گسیٹا جارہا ہے ۔یونیورسٹی انتظامیہ ایک عرصے سے اپنی غلط پالیسیوں کی وجہ سے طلباء کے استحصال میں ملوث ہے۔

افسوسناک امر ہے کہ ایک ممتاز تعلیمی ادارے کے طلباء آئے روز حقوق کے حصول کے لیے احتجاج پر مجبور ہوتے ہیں۔ بی ایس او کے سیکرٹری جنرل منیر جالب بلوچ اور دیگر طلباء کے گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وائس چانسلر یونیورسٹی آف بلوچستان بوکھلاہٹ کا شکار ہوکر طلباء کے پرامن احتجاجی مظاہرہ کو منتشر کرنے کے لیے طلباء پر پولیس گردی اور ان کی گرفتاری لاٹھی چارج قابل مذمت عمل هے

کرپٹ وائس چانسلر طلباء وطالبات کے تعلیمی سال سے کھلوار اور انہیں رول نمبر سلپ جاری نہ کرنا سمجھ سے بالاتر هے کرپٹ وائس چانسلر اور یونیورسٹی انتظامیہ اپنے نااہلی اور نالائقی کی سزا طلباء وطالبات کو دے رہے ہیں مزید انہوں نے کہا کہ تمام گرفتار طلباء وطالبات کی رہائی کا مطالبہ کرتے ہیں انہوں نے مطالبہ کیا

کہ فیس جمع کرانے والے تمام طلباء کو جو سینکڑوں میل فاصلہ طے کر کے کوئٹہ آئے ہیں ان رول نمبر سلپ جاری کیا جائے بصورت دیگر احتجاج کو مزید وسعت دی جائیگی۔ حکومت بلوچستان اور گورنر بلوچستان سے فوری طور پر نوٹس لینےکی اپیل کی جاتی ہے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.