حکومت وقت نوجوان طالبعلم نسیم جان پوپلزئی کے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے اعلیٰ سطحی ٹیم تشکیل دے، آغا حسن بلوچ

0 11

چاغی(نامہ نگار)بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات و رکن قومی اسمبلی آغا حسن بلوچ نے تحصیل چاغی کے نوجوان طالبعلم نسیم پوپلزئی کے بہیمانہ قتل کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان طالبعلم کو کچھ مہینے قبل چاغی سے اغواء کیا گیا تھا اور چند روز بعد اسکی مسخ شدہ لاش پھینک دیا گیا جو ناقابل شناخت تھا مگر گزشتہ روز ڈین این اے ٹیسٹ میں یہ ثابت ہوا کہ کچھ مہینہ قبل ملنے والا لاش نوجوان طالبعلم نسیمِ جان پوپلزئی کی ہے نوجوان کے اغواء میں ملوث ملزمان کی نشاندھی کے باوجود ضلعی انتظامیہ انہیں گرفتار کرنے سے قاصر تھا اور اب لاش کی شناخت ہونے کے بعد انتظامیہ ہاتھ پہ ہاتھ رکھے بے فکر بیٹھا ہے جو کہ نہ صرف ناقابل برداشت ہے بلکہ قابل افسوس بات ہے لائن آرڈر کے نام پہ سالانہ اربوں روپے رکھے جاتے ہیں تاکہ لوگوں کی حفاظت ہو مگر انتظامیہ خود ایسے عناصر کی پشت پناہی کرتی ہے اور انہیں گرفتار کرنے کے بجائے راہ فرار کا راستہ دکھاتی ہے جو کہ قانون کے رکھوالوں کیلئے ایک تھمانچہ ہے بلوچستان نیشنل پارٹی شروع سے یہی کہتا چلا آ رہا ہے کہ افغان مہاجرین نہ صرف ہمارے سرزمین پر بوجھ ہے بلکہ کلاشنکوف کلچر ہمارے رہن سہن سمیت معاشی معاشرتی زندگی پر بھی حاوی ہے انہیں جتنا جلدی ہوسکیں بلوچستان سے نکال دیا جائے مگر افسوس کہ بلوچستان نیشنل پارٹی کے اس جدوجہد کو کچھ لوگوں نے اپنی سیاست چمکانے کیلئے ایک جذباتی نعرہ قرار دیا آج بلوچستان کے لوگ افغان مہاجرین کی بڑھتی ہوئی تعداد بیزار آ چکے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت وقت نوجوان طالبعلم نسیم جان پوپلزئی کے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے اعلیٰ سطحی ٹیم تشکیل دیں کر ملوث ملزمان کو گرفتارکرکے نسیم جان کے خاندان کو انصاف فراہم کریں حکومت وقت اور ضلعی انتظامیہ نے مزید نوجوان نسیمِ جان کے قاتلوں کے گرفتاری کیلئے کمزوری دکھائی تو بلوچستان نیشنل پارٹی عوامی قوت کے ساتھ نہ صرف بھرپور احتجاج کریں گی بلکہ پارلمینٹ کے فورم پر اس پر احتجاج ریکارڈ کریں گے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.