غیر قانونی کلینکس اور جعلی اتائی ڈاکٹروں نے عوام کی زندگیاں اجیرن بنارکھی ہیں، کاشف حیدری

0 12

کوئٹہ ( ) سماجی کارکن کاشف حیدری نے کہا ہے کہ علاقے میں قائم غیر قانونی کلینکس اور جعلی اتائی ڈاکٹروں نے عوام کی زندگیاں اجیرن بنارکھی ہیں۔ سرکاری ہسپتالوں میں سہولیات کی عدم فراہمی کا فائدہ اٹھاکر جعلی اتائی ڈاکٹر عوام کی زندگیوں سے کیھلنے کے ساتھ ساتھ عوام کی زندگیاں بھی خطرے میں ڈال رکھی ہیں۔ یہ بات انہوں نے ہفتہ کو اپنی رہائش گاہ پر پریس

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ کوئٹہ کے نواحی علاقہ ہزارہ ٹاون میں جعلی اتائی ڈاکٹروں اور غیر قانونی کلینکس نے ڈھیرے جمالئے ہیں۔ جس کی وجہ سے لوگوں کی زندگی مشکل ہوگئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں میں بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی کا فائدہ اٹھا کر جعلی اتائی ڈاکٹرز عوام کو لوٹ رہے ہیں اور عوام کی زندگیوں سے کھیل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئے روز اتائیوں کے ہاتھوں معصوم جانوں کا ضیاع معمول بن گیا ہیں۔ ان کا کہنا تھا

کہ گزشتہ عید کے دنوں میں ہی ہزارہ ٹاون میں اتائی ڈاکٹر کی لاپرواہی سے نوجوان جاں بحق ہوگیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جعلی عطائی ڈاکٹر کے ہاتھوں نوجوان کی ہلاکت کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے بلکہ اس سے پہلے بھی اس طرح کے واقعات رونما ہوچکے ہیں۔ جس کی وجہ سے معصوم بے گناہ شہری لقمعہ اجل بن رہے ہیں۔ انہوں بتایا کہ متعدد بار ضلعی انتظامیہ اور پولیس کیجانب سے غیر قانونی طور پر چلائے جانے والے کلینکس اور میڈیکل اسٹورز کو سیل کئے جانے اور مالکان کی گرفتاریوں کے باوجود جعلی عطائی ڈاکٹرز اور کلینکس اپنا دھندہ چلارہے ہیں۔ انہوں نے محکمہ صحت، ضلعی انتظامیہ، اسسٹنٹ کمشنر اور ڈی سی نوٹس لیکر جعلی عطائی ڈاکٹرز اور غیر لائسنس یافتہ کلینکس اور میڈیکل اسٹورز کیخلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائیں۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.